برطانیہ: ’بریگزٹ کےبعد یورپی یونین ورکرز کو اولیت نہیں ملے گی‘

  • 30
  •  
  •  
  •  
  •  
    30
    Shares

برطانوی کابینہ نے اتفاق کیا ہے کہ برطانیہ کا بریگزٹ سے انخلا مکمل ہونے کے بعد یورپی یونین کے لوگوں کو بھی امیگریشن قوانین کا اسی طرح سامنا کرنا چاہیے جس طرح باقی دنیا کے لوگ کرتے ہیں۔

یہ معاہدہ آزاد مائیگریشن ایڈوائزی کمیٹی (میک) کی جانب سے دی جانے والی سفارشات کی تقلید کرتا ہے اور برطانیہ کی لیبر پارٹی اس کی حمایت کرتی ہے۔

برطانیہ کی وزیر اعظم ٹریزا مے بار بار اپنا عہد دہرا چکی ہیں کہ بریگزٹ کے بعد یورپ سے لا محدود امیگریشن ختم ہو جائے گی۔

لیبر پارٹی کے شیڈو بریگزٹ سیکریٹری سر کائر سٹارمر کا کہنا ہے کہ امتیاز کو روکنے کے لیے ’منصفافہ‘ سسٹم کی ضرورت ہے۔

برطانوی کابینہ نے پیر کو میک کے چیئرمین پروفیسر ایلن کی جانب سے دی جانے والی طویل پریزنٹیشن کے بعد اس معاہدے سے اتفاق کیا ہے۔

ایک ذریعے کے مطابق اس اصول پراتفاق کیا گیا تھا کہ برطانیہ کام تک رسائی دیتے ہوئے کسی دوسرے حصے سے تعلق رکھنے والے تارکین وطن کے لیے تعصب کا مظاہرہ نہیں کرے گا۔

تاہم کابینہ کے ایک ذریعے نے بتایا کہ اس معاہدے کو ایک مضبوط فیصلہ نہیں بنایا گیا۔ حکومتی ذریعہ نے بتایا کہ یورپی یونین کے شہریوں کے لیے ’ہلکا ٹچ مائیگریشن‘ قوانین کسی بریگزٹ ٹریڈ ڈیل کا حصہ ہو سکتے ہیں۔

یورپی یونین کے آزایِ نقل و حرکت آزادی کے اصول فی الحال یورپین اکنامک ایریا، یورپی یونین کے تمام اراکین کے ساتھ ساتھ ناروے، آئس لینڈ، لیشٹنسٹائن اور سوئٹزر لینڈ کے لوگوں کو ویزوں کے بغیر سفر اور کام کرنے کی اجازت ہوتی ہے۔

جو بھی یورپی یونین کے ساتھ ساتھ ناروے، آئس لینڈ، لیشٹنسٹائن اور سوئٹزرلینڈ سے باہر اور انگلینڈ منتقل ہونے کی خواہش رکھتا ہے وہ ورک یا پڑھائی کے ویزوں کے لیے اپلائی کر سکتا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ سال جون میں برطانیہ میں یورپی یونین میں رہنے یا نکل جانے کے سوال پر ہونے والے تاریخی ریفرینڈم کے نتائج کے مطابق 52 فیصد عوام نے یورپی یونین سے علیحدگی ہونے کے حق میں جبکہ 48 فیصد نے یونین کا حصہ رہنے کے حق میں ووٹ دیا تھا۔

شمال مشرقی انگلینڈ، ویلز اور مڈلینڈز میں زیادہ تر ووٹر یورپی یونین سے الگ ہونے کے حامی نظر آئے جبکہ لندن، سکاٹ لینڈ اور شمالی آئرلینڈ کے زیادہ تر ووٹروں نے یورپی یونین کے ساتھ رہنے کے حق میں ووٹ دیا تھا۔

 

 


  • 30
  •  
  •  
  •  
  •  
    30
    Shares

اترك تعليقاً

This site is protected by wp-copyrightpro.com