برطانیہ داخل ہونے کی کوشش میں کتنی بار تارکینِ وطن ہلاک ہو جاتے ہیں؟

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

برطانیہ کے علاقے ایسکس میں ایک ٹرالر پر موجود کنٹینر سے 39 افراد کی لاشیں ملیں جن کی شناخت چینی باشندوں کے طور پر ہوئی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ کنٹینر بلغاریہ سے آ رہا تھا اور وہ سنیچر کے روز برطانیہ میں ہولی ہیڈ کے راستے داخل ہوا تھا۔

برطانیہ داخل ہونے کی کوشش میں کتنے تارکینِ وطن ہلاک ہوئے؟

اس سانحے سے قبل جب سنہ 2014 میں اعداد و شمار جمع کیے جانے لگے تب برطانیہ میں پانچ افراد لاریوں یا کنٹینروں پر یا ان کے اندر مردہ پائے گئے تھے۔

خیال یہی ہے کہ ان کی ہلاکت انسانی سمگلنگ کے دوران اپنی مطلوبہ منزل پر جاتے ہوئے یا جس وقت انھیں بند کیا گیا، تب واقع ہوئی۔

  • سنہ 2014: ٹیلبری ڈاکس، ایسیکس میں ایک افغان تارکِ وطن مردہ حالت میں پائے گئے۔ وہ ایک بحری جہاز کے کنٹینر میں تھے۔ ان کے علاوہ اس کنٹینر میں موجود 34 افغان زندہ بچ گئے تھے۔
  • سنہ 2015: برنسٹن، سٹافورڈشائر کے ایک گودام میں لکڑی کے کریٹ میں دو تارکینِ وطن مردہ حالت میں پائے گئے۔ یہ کریٹ اٹلی سے ایک کنٹینر کے ذریعے بھیجا گیا تھا۔
  • سنہ 2016: بینبیری، آکسفورڈ شائر میں ایک 18 سالہ تارکِ وطن کو اس وقت کچل دیا گیا جب وہ لاری کے نیچے چمٹے ہوئے تھے۔
  • سنہ 2016: کینٹ میں ایک لاری کے پچھلے حصے سے ایک لاش ملی جو فرانس سے سفر کرتی ہوئی وہاں تک پہنچی تھی۔

سنہ 2014 سے پہلے اسی طرح کے اعداو شمار اکٹھا نہیں کیے گئے تھے، لیکن اس قسم کے سانحات نئے نہیں ہیں۔

سنہ 2000 میں ڈوور کی ایک لاری سے 58 چینی تارکین وطن کی لاشیں ملیں جن کی ہلاکت دم گھٹنے کے نتیجے میں واقع ہوئی۔ لاری کا ڈرائیور قتل کے الزام میں مجرم قرار پایا تھا اور اسے 14 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

غیر قانونی طور پر لوگ برطانیہ کیسے پہنچتے ہیں؟

فرانس میں تارکین وطن کیمپوں کی بندش کے بعد سنہ 2016-17 کے درمیان برطانیہ میں داخل ہونے کی بہت کم کوششیں کی گئیں۔

برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی کے مطابق منظم جرائم پیشہ گروہ سمندری راستوں کی حدود کو مزید ہم آہنگ بنا رہے ہیں۔

سنہ 2018 کے دوران خفیہ راستوں سے برطانیہ میں داخل ہونے کے طریقوں میں اضافہ دیکھا گیا۔ جس میں لوگوں کو کنٹینروں اور سامان ٹھنڈا رکھنے والی بھاری گاڑیوں میں لے جانا شامل ہے۔

جن طریقوں کا استعمال کرتے ہوئے تارکینِ وطن لائے جاتے ہیں، انسانوں کی اسمگلنگ کے اصل پیمانے کا تعین کرنا مشکل ہے۔

پولیس غیر قانونی طور پر ملک میں داخل ہونے کے الزام میں گرفتار ہونے والے افراد کے اعداد و شمار مرتب کرتی ہے لیکن انھیں باقاعدگی سے شائع نہیں کیا جاتا۔

2013 سے اپریل 2016 کے درمیان برطانیہ میں غیر قانونی طور پر داخل ہونے پر 27860 افراد کو گرفتار کیا گیا۔ اور اسی دوران گرفتاریوں میں 25 فیصد اضافہ ہوا۔

اسی عرصے میں غیر قانونی داخلے میں سہولت کاری کرنے والے 2482 افراد کو بھی گرفتار کیا گیا۔


  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

جواب دیں

This site is protected by wp-copyrightpro.com