دو پاکستانیوں کا اغوا برائے تاوان۔۔ اور رہائی

  • 52
  •  
  •  
  •  
  •  
    52
    Shares

تھیسلونیکی کا شہر “دیاواتا” جہاں دو پاکستانیوں کو اغوا کرکے رکھا گیا اور ان کو روزانہ اذیت پہنچائی جاتی تاکہ وہ اپنے رشتہ داروں سے رابطہ کر کے 5000 یورو اغوا کرنے والوں کو دیں۔

اغوا ہونے والے دو پاکستانیوں جن کی عمریں بالترتیب 43اور 20سال ہیں کا کہنا ہے کہ ان کو نامعلوم افراد ایک کارخانہ نما جگہ پر لے گئے جہاں انہیں قید رکھا گیا اور ان سے کہا گیا کہ پانچ ہزار یورو دے کر رہائی حاصل  سکتے ہیں۔جب اغوا کاروں کو آدھی رقم ادا کر دی گئی تو انہوں نے اس شرط پر رہا دیا کہ کچھ دنوں تک بقایا رقم ان کے حوالے کردی جائے۔

مگر رہائی کے بعد دونوں پاکستانیوں نے فوراً پولیس سے رابطہ کیا اور پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے ایک 31سالہ اغوا کار کو گرفتار کرلیا۔اس اغوا کرنے والے شخص کا تعلق بھی پاکستان سے ہے۔

گرفتار ہونے والے شخص سے تفتیش جاری ہے تاکہ اس کے باقی ماندہ گروہ کا پتا بھی چلایا جاسکے۔


  • 52
  •  
  •  
  •  
  •  
    52
    Shares

اترك تعليقاً

This site is protected by wp-copyrightpro.com