شمالی مقدونیہ میں 56 غیرقانونی پاکستانی تارکین وطن پکڑے گئے۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

شمالی مقدونیہ میں پولیس نے ایک وین میں چھپے ہوئے 58 غیرقانونی تارکین وطن کو برآمد کر لیا ہے، جن میں بڑی تعداد پاکستانی شہریوں کی تھی۔

پولیس کے مطابق ایک مشتبہ وین کو روک کر تلاشی لی گئی، تو اس میں 58 غیرقانونی تارکین وطن چھپے ہوئے تھے، جن میں 56 پاکستانی اور دو شامی شہری تھی۔ پولیس کے مطابق یہ وین کوسووو سے شمالی مقدونیہ میں داخل ہوئی تھی۔

پکڑے گئے ان تارکین وطن کو یونانی سرحد کے قریبی علاقے گیوگیلیجا میں واقع ایک مہاجر مرکز منتقل کیا گیا ہے۔

یہ بات اہم ہے کہ بہت سے تارکین وطن یونان اور کوسووو سے مقدونیہ اور پھر شمالی اور مغربی یورپی ممالک کی جانب جانے کی کوشش کرتے ہیں۔ پولیس کے مطابق ان تارکین وطن کی اسمگلنگ کے شبے میں تین افراد کو حراست میں بھی لے لیا گیا ہے۔

شمالی مقدونیہ ہی میں رواں برس مارچ میں اس وقت ایک بنگلہ دیشی تارکین وطن ہلاک اور چھ پاکستانی زخمی ہو گئے تھے، جب انہوں نے پکڑے جانے کے خوف سے ایک تیز رفتار گاڑی سے چھلانگ لگائی تھی۔ پولیس کا کہنا تھا کہ ایک مشتبہ وین کو روکنے کی کوشش کی گئی، تو اس کے ڈرائیور میں گاڑی میں موجود تارکین وطن کو چلتی گاڑی سے چھلانگ لگانے کا کہا۔ اس گاڑی میں مجموعی طور پر 14 پاکستانی تارکین وطن سوار تھے۔

 


  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اترك تعليقاً

This site is protected by wp-copyrightpro.com