موریا کیمپ پولیس اہلکاروں کو وبائی بیماری کا خطرہ۔

  • 30
  •  
  •  
  •  
  •  
    30
    Shares

پولیس سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق وہ پولیس اہلکار جو مشہور زمانہ موریا کیمپ میں تعینات ہیں ان سب سے اپنا بلڈ ٹیسٹ کروانے کے لیے کہہ دیا گیا ہے۔

بلڈ ٹیسٹ کروانے کی وجہ ایک پولیس اہلکار کی بیماری ہے جو کہ موریہ کیمپ میں تعینات تھا اور اس بیماری میں مبتلا ہوکر ہسپتال میں داخل رہا ہے تفصیلات کے مطابق اس پولیس اہلکار کو جسے یہ بیماری لاحق ہوئی تھی آج سے 6 دن پہلے ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا جہاں پر خون کا ٹیسٹ لینے سے اس بات کا پتہ چلا کے یہ پولیس ہلکار” ٹیوبر کلوسس” نامی بیماری میں مبتلا ہے تاہم ہسپتال سے فارغ کردیا گیا اور کہا گیا کہ چھ مہینے تک مزید دوائی کھانا پڑے گی۔

ان خطرات کو مدنظر رکھتے ہوئے موریا کیمپ میں تعینات ہونے والے تمام پولیس اہلکاروں سے کہا گیا ہے کہ وہ اپنے خون کے ٹیسٹ کروائیں تاکہ کسی بھی قسم کی بیماری سے بچا جا سکے اور وقت سے پہلے حفاظتی اقدامات کیے جاسکیں۔

واضح رہے کہ موریا کیمپ میں پناہ گزینوں کی بہت بڑی تعداد اب بھی موجود ہے اور اقوام متحدہ کے علاوہ کئی فلاحی تنظیموں نے اس کیمپ کو انسانی زندگی کے لیے نامناسب قرار دیا ہے۔جہاں گنجائش سے بہت زیادہ لوگ رہائش پذیر ہیں اور گندگی اور تعفن کی وجہ سے پناہ گزینوں کی اکثریت مختلف بیماریوں میں مبتلا ہوچکی ہے۔


  • 30
  •  
  •  
  •  
  •  
    30
    Shares

اترك تعليقاً

This site is protected by wp-copyrightpro.com