نیکیا میں پاکستانیوں کے ہاتھوں پولیس اہلکار کی پٹائی۔

  • 78
  •  
  •  
  •  
  •  
    78
    Shares

ایتھنز کے علاقے نیکیا میں پاکستانیوں نے پولیس اہلکار کی پٹائی کر دی۔

جب شور کی آواز سن کر ہمسایوں نے پولیس کو فون کیا تو کچھ دیر بعد پولیس پہنچ گئی۔پاکستانیوں نے اپنے آپ کو پولیس کے حوالے کرتے ہوئے یہ بیان ریکارڈ کروایا۔

 پاکستانیوں کا کہنا ہے کہ رات کو پولیس اہلکار اور اس کے ساتھ تین اور افراد ان کی رہائش گاہ میں گھس آئے اور6 پاکستانیوں کو باندھ کر ان سے نقد کیش اور دوسری چیزیں چھین لیں۔جب رہائش میں موجود تمام اشیاء جو کچھ بھی ان کے خیال میں کارآمد تھا سب کا صفایا کر چکے تو پولیس اہلکار کے ساتھ تین افراد باہر نکل گئے جبکہ کمرے میں اکیلا پولیس اہلکار رہ گیا۔اسی عرصے میں چھ میں سے ایک پاکستانی نے اپنے آپ کو آزاد کروا لیا اور اس نے پولیس اہلکار پر حملہ کر دیا حملہ کرتے ہوئے پولیس اہلکار کو بے بس کر دیا اور اسے باندھنے کے ساتھ ساتھ دوسرے ساتھیوں کو بھی آزاد کروالیا۔

دوسرے ساتھیوں کے آزاد ہونے پر انہوں نے پولیس اہلکار کی خوب پٹائی کی اور چھری سے اس کے کان بھی کاٹ دیئے۔

دوسری جانب پولیس اہلکار کا کہنا ہے کہ وہ اپنی ڈیوٹی سے واپس جب گھر پہنچا تو اس نے شور کی آواز سن کر پاکستانیوں کی رہائشگاہ پر جاکر کہا کہ پولیس پولیس تو انہوں نے اس پر حملہ کر دیا حملہ کرنے کے بعد اسے لاتوں سے اور گھونسوں سے  پٹائی کی پولیس اہلکار کا کہنا ہے کہ اسنے باہر نکلنے کی کوشش کی لیکن دروازہ بند تھا اور وہ باہر نہ نکل سکا۔

معاملہ پولیس کے پاس چلاگیا ہے اور اس کی تفتیش کی جا رہی ہے کہ آیا پاکستانی جھوٹ بول رہے ہیں یا پولیس اہلکار جھوٹ بول رہا ہے۔

یہاں پولیس اہلکار کا یہ بیان بھی قابل ذکر ہے جس میں اس کا کہنا ہے کہ پچھلے کچھ عرصے سے پاکستانی غیرقانونی سرگرمیوںمیں ملوث تھے اور وہ ان کا پیچھا کرتا رہتا تھا۔

تحقیقاتی کمیٹی دونوں فریقین کے بیان قلمبند کرنے کے بعد اور تحقیقات مکمل کرنے کے بعد اپنا بیان ریکارڈ کروائے گی اور اس تحقیق کی روشنی میں ہی کچھ کہا جاسکے گا کہ کونسا فریق صحیح کہہ رہا ہے۔


  • 78
  •  
  •  
  •  
  •  
    78
    Shares

اترك تعليقاً

This site is protected by wp-copyrightpro.com