پاکستان اور انڈیا کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی۔

  • 145
  •  
  •  
  •  
  •  
    145
    Shares

پلوامہ حملے کے بعد پاکستان اور انڈیا کے درمیان ہونے والی کشیدگی تھمنے کی بجائے بڑھ گئی۔

گزشتہ رات انڈین ایئرفورس نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے پاکستانی فضائی حدود میں داخل ہو کر جیش محمد کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا اس دعوے کو پاکستان نے یکسر مسترد کردیا اور آئی ایس آئی کے نمائندے نے واضح الفاظ میں اعلان کیا کہ پاکستان اپنی فضائی حدود کی خلاف ورزی کا بدلہ لے گا۔

آخری اطلاعات آنے تک سیالکوٹ سیکٹر میں پاکستان کی جانب سے بھاری گولہ باری جاری ہے۔

انڈین میڈیا کی جانب سے بھی اس بات کا اعتراف کیا گیا ہے کہ سیالکوٹ سیکٹر میں پاکستان کی جانب سے پانچ بجے سے فائرنگ جاری ہے اور انڈیانے بارڈر کے قریب دیہات خالی کروا کے لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کرنا شروع کر دیا ہے ۔

دوسری جانب وزیراعظم پاکستان عمران خان نے پاک فوج کو مکمل اختیارات دیتے ہوئے اس بات کا اعلان کیا تھا کہ اگر پاکستان کی سالمیت کی طرف کسی نے میلی آنکھ سے دیکھا تو اس کا جواب دیا جائے۔

کل یعنی 27 فروری کو اسی سلسلے میں سینٹ کا مشترکہ اجلاس بھی طلب کیا گیا ہے جہاں امید ظاہر کی جا رہی ہے کہ تمام پارٹیوں کی جانب سے مشترکہ اعلامیہ جاری کیا جائے گا اور بھارت کے پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کرنے کی مذمت کی جائے گی۔

دوسری جانب وزیر اعظم نے وفاقی کابینہ کا اجلاس بھی آج طلب کرلیا۔ اجلاس میں ملک کی معاشی اور سلامتی کی صورت حال کا جائزہ لیا جائے گا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کابینہ کو دیگر ممالک سے ہونے والے رابطوں سے آگاہ کریں گے، وفاقی کابینہ کو قومی سلامتی کمیٹی کے فیصلوں پر بھی بریفنگ دی جائے گی۔


  • 145
  •  
  •  
  •  
  •  
    145
    Shares

اترك تعليقاً

This site is protected by wp-copyrightpro.com