یونان سے چوری شدہ کینسر کی ادویات جرمنی میں فروخت ہوتی رہیں۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

یونان سے چوری شدہ کینسر کی ادویات کے جرمنی میں استعمال ہونے کے سلسلے میں جرمنی کی سٹیٹ” برانڈ نبرگ “کے دو وزرا نے استعفے دے دیئے کچھ دن پہلے وزیر صحت البرٹ گیربر نے استعفی’ دیا تھا ایک اور وزیر جس کا نام ڈیانا گولچے ہے اس نے بھی آج اپنا استعفیٰ دے دیا۔اس کا کہنا تھا کے مجھے اس بارے میں کچھ علم نہیں تھا کہ لونا فارم پر مقدمہ درج ہو چکا تھا۔

یاد رہے کہ جرمنی کی ادویات بنانے والی کمپنی لونا فارم میں کینسر کے لئے استعمال ہونے والی ادویات فروخت ہوتی رہیں یہ ادویات یونان کے ہسپتالوں سے چرائی گئی تھیں۔

یونانی حکام نے 2016 میں لونا فارم کو آگاہ کر دیا تھا کہ یہ ادویات ان کے ملک سے چرائی گئی ہیں لیکن اس وقت اس معاملے میں کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی تھی۔

اس سلسلے میں زیادہ پیش رفت اس وقت ہوئی جب ایک ٹی وی چینل نے اس بارے میں تحقیق کرنی شروع کی۔

جب ٹیلی ویژن چینل نے اس بارے میں تحقیق شروع کی ہے تو کچھ ہی دنوں میں دو وزراء اپنا استعفیٰ دے چکے ہیں۔


  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اترك تعليقاً

This site is protected by wp-copyrightpro.com