اٹلی کے حوالے سے یورپین یونین میں تشویش۔

اٹلی کی جانب سے سخت شرائط پر بیل آوٹ پروگرام نہ لینے کا فیصلہ کرنے کے بعد یورپین یونین کے اندر تشویش پائی جاتی ہے اس لیے کہ اگر اٹلی کی حالت بھی یونان جیسی ہوتی ہے تو اس کے بعد سپین کا نمبر بھی آسکتا ہے ۔

یورپی یونین کے رہنماؤں کے درمیان ہونے والی اس ہفتے کی میٹنگ اس بات کا فیصلہ کرے گی کے اٹلی کے لئے کونسا پیکج مناسب رہے گا۔

واضح رہے کہ اٹلی میں بینکنگ سیکٹر شدید دباؤ کا شکار ہے اور اٹلی کو اپنے حکومت کے معاملات چلانے کے لیے یورپی یونین سے قرضہ لینا پڑے گا اس کے علاوہ اٹلی کو آئی ایم ایف سے بھی قرضہ لینا پڑے گا جبکہ اٹلی نے اعلان کیا ہے کہ اس قرضے کے عوض وہ اپنی عوام پر سخت شرائط نافذ نہیں کریں گے۔

یورپی یونین کے رہنماؤں کی جانب سے اٹلی کے ساتھ مذاکرات جاری ہیں اور یورپی یونین کے رہنماؤں کی جانب سے اٹلی کو ایک بیل آوٹ پروگرام دینے کی آفر کی جارہی ہے لیکن اٹلی اس بیل آؤٹ پیکج کو لینے کے لیے رضا مند دکھائی نہیں دیتا۔

دوسری جانب جرمنی کی چانسلر اینجلا مرکل کا کہنا ہے کہ یورپی یونین میں رہتے ہوئے اٹلی کے معاملات کو حل کر لیا جائے گا۔

جواب دیں

This site is protected by wp-copyrightpro.com