ایتھنز میں بننے والی پہلی سرکاری مسجد کے مینار نہیں ہوں گے۔

ذرائع کے مطابق ایتھنز میں بننے والی پہلی سرکاری مسجد میناروں کے بغیر ہوگی اس مسجد کی تعمیر بہت جلد مکمل ہونے والی ہے اور مسلم کمیونٹیز کے سربراہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ مسجد کی تعمیر اسلامی تمدن کے مطابق نہیں کی جا رہی۔

اس مسجد میں 300 لوگوں کے نماز پڑھنے کی جگہ ہے۔ جبکہ پچاس عورتیں بھی نماز پڑھ سکتی ہیں۔

مسجد میں لاؤڈ سپیکر استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔

مسجد میں امام کی حیثیت سے منتخب کیے جانے کے لئے درخواستیں ہو چکی ہیں جس کے لیے کئی افراد نے درخواستیں دے رکھی ہیں۔

واضح رہے کہ ترکی کے صدر طیب اردوگان نے اس سلسلے میں یونان کی حکومت پر زور دیا تھا کہ ایتھنزمیں تعمیر ہونے والی مسجد کو باقاعدہ میناروں کے ساتھ تعمیر کیا جائے جس طرح سے باقی اسلامی ممالک میں مساجد تعمیر کی جاتی ہیں لیکن طیب اردگان کی اس تجویز کو یونان کی حکومت نے ماننے سے انکار کردیا تھا۔

اس سلسلے میں مسلم کمیونٹیز کے سربراہان نے کہا ہے کہ ہم یونان کی حکومت کے ساتھ مل بیٹھ کر تمام معاملات طے کرلیں گے۔

جواب دیں

This site is protected by wp-copyrightpro.com